Kiya Marne Wale Ko 40 Din Pehle Mout ka Pata Chal Jata He?


0

Marne Wale Ko

السلام علیکم ورحمتہ اللہ ناظرین محترم عوام میں ایک بات مشہور ہے. کہ مرنے والے کو اس کی موت سے چالیس دن پہلے پتہ چل جاتا ہے کہ وہ مرنے والا ہے. اور مرنے والے کو اپنی موت کے بارے میں کسی کو بتانے کی اجازت نہیں ہوتی ہے۔ کچھ اشارے وہ کر جاتا ہے جس کا پتہ اس کی موت کے بعد چلتا ہے کہ یہ اشارے اس کے موت کی طرف تھے کیا یہ بات حقیقت ہے؟ کیا یہ سچ ہے؟ کہ مرنے والے کو موت سے چالیس دن پہلے پتہ چل جاتا ہے

آج اس پر بات کریں گے کہ حقیقت کیا ہے اور سچ کیا ہے قرآن پاک کے پارہ نمبر اکیس سورۃ لقمان کی آخری آیت میں اللہ کریم نے واضح اعلان کیا ہے کہ پانچ چیزوں کا علم اللہ کے پاس ہے کون سی پانچ چیزیں قیامت کا علم اللہ کے پاس ہے بارش کا علم اللہ کے پاس ہے پیٹ میں لڑکا ہے یا لڑکی ہے اللہ کے پاس علم ہے کل کیا ہوگا اس کا علم اللہ کے پاس ہے اور کون کس زمین پر مرے گا اس کا علم بھی اللہ کے پاس ہے تو پانچ چیزیں یہ قرآن کریم میں بیان کی گئی ہیں

ان کا علم اللہ نے اپنے پاس رکھا آپ کہیں گے کہ کی خبریں آ جاتی ہیں کہ فلاں دن بارش ہو گی تو ہو جاتی ہے یہ اندازے ہیں یہ خبریں بعض اوقات غلط بھی ہو جاتی ہیں کبھی ٹھیک بھی ہو جاتی ہے پیٹ میں بچہ ہے یا بچی ہے اس کے بارے میں کبھی غلط بھی خبر آتی ہے کبھی ٹھیک بھی آتی ہے اصل حقیقت میں جو علم ہے وہ اللہ کے پاس ہے

تو موت کا علم اللہ نے اپنے پاس رکھا ہے کسی کو اس کا خبر اس کا پتہ نہیں ہے اور اگر کسی کو موت کے بارے میں علم ہو جائے تو میرا نہیں خیال کہ پھر وہ چالیس دن دنیا کے کام کاج کرے گا بلکہ وہ کھانہ پینا بھی چھوڑ کے بیٹھ جائے گا

تو وہ تو کسی قسم کی خوشی میں شریک نہیں ہوگا کسی قسم کے پرگرام میں شریک نہیں ہوگا کیونکہ اس کو تو پتا ہے کہ میری موت آنے والی ہے اور جس کو یہ پتا چل جائے کہ چند دنوں کے بعد میں نے مرنا ہے اس کی حالت کیا ہوگی آپ نے سنا ہوگا کئی بار خبروں میں کہ جناب شادی والے دن دولہا کی اچانک موت ہوگئی ہے کسی نے قتل کر دیا تو اگر اس کو پتا تھا کہ میں نے چالیس دن بعد مر جانا ہے تو پھر شادی کا اہتمام کیوں کرایا گیا اسی طرح عید والے دن تیاری کی ہوتی ہے عید کی لیکن کیا ہوتا ہے اچانک موت آ جاتی ہے تو یہ محض غلط باتیں ہیں جو عوام مشہور ہو چکی ہیں ان کا حقیقت سے کوئی تعلق نہیں ہے موت کا علم اللہ کو ہے اگر اللہ کے نبی اپنی موت کے بارے میں بتائیں تو وہ معجزہ ہے.

اللہ کا ولی بتائے. اور اس کے مطابق ان کی موت ہو جائے تو وہ کرامت ہے. لیکن عام آدمی کہے کہ جناب ہر بندے کو پتہ ہے تو ایسا کچھ نہیں ہے. آگاہ اپنی موت سے کوئی بشر نہیں. سامان سو برس کا پل کی خبر نہیں

Advertisement

Like it? Share with your friends!

0
2pglv

0 Comments

Your email address will not be published.